Thursday, 25 Feb, 2.03 am بصیرت آن لائن

ہندوستان
پنڈوچیری میں مینڈیٹ گرانے پر عوام بی جے پی کو دے گی کرارا جواب : موئلی

نئی دہلی،24 فروری (بی این ایس )
سینئر کانگریس لیڈر ویرپا موئیلی نے بدھ کے روز بی جے پی پر پنڈوچیری میں کانگریس حکومت کے گرانے کے لئے پیسہ اور طاقت کا استعمال کرنے کا الزام عائد کرتے ہوئے کہا ہے کہ ملک کی عوام مینڈیٹ کو گرانے کے لئے زعفرانی پارٹی کو منہ توڑ جواب دے گی۔انہوں نے دعویٰ کیا کہ جمہوری اقدار کا تحفظ آئندہ انتخابات کا بنیادی مسئلہ ہوگا۔ مرکزی علاقے میں آئندہ ہونے والے اسمبلی انتخابات کے پیش نظر کانگریس کے ذریعہ مقرر کردہ سینئر مبصر موئیلی نے کہا کہ دراویڈا مننتر کتھاگام (ڈی ایم کے) کے ساتھ پارٹی کا اتحاد جاری رہے گا اور آنے والے انتخابات میں اس اتحاد کو شاندار اکثریت ملے گی۔ ایک انٹرویو میں موئلی نے دعوی کیا کہ پنڈوچیری کا الیکشن بی جے پی کے خاتمے کا آغاز ہوگا اور کانگریس پارٹی ملک میں جمہوری طاقت کو تقویت بخشے گے۔ بی جے پی پر حملہ کرتے ہوئے سابق مرکزی وزیر نے کہا کہ مرکزنے پنڈوچیری کی کانگریس حکومت کو کبھی بھی کام نہیں کرنے دیا اور اس کے لئے اس وقت کی لیفٹیننٹ گورنر کرن بیدی کو آگے رکھا گیا ۔ موئیلی نے کہاکہ ان کا واحد مقصد کانگریس حکومت کو کام کرنے نہیں دینا تھا۔واضح رہے کہ کانگریس اور ڈی ایم کے کے کچھ ممبران اسمبلی کے استعفیٰ کے بعد کانگریس کی حکومت اسمبلی میں اقلیت میں آگئی تھی۔ اور اس کے بعد نارائن سوامی کو استعفیٰ دینا پڑا۔ موئلی نے الزام لگایا کہ مودی اور شاہ کی قیادت میں مرکزی حکومت نے پنڈوچیری میں پچھلے چار پانچ سالوں میں جمہوریت کاقتل کیا اور کسی بھی ترقیاتی کام کی اجازت نہیں دی۔ انہوں نے دعوی کیا کہ پڈوچیری کے ایم ایل اے بھی دم گھٹنے کا احساس کر رہے ہیں کیونکہ انہیں لگتا ہے کہ اگر حکومت دوبارہ اقتدار میں آئی تو بیدی انہیں کام کرنے نہیں دیں گی۔

Dailyhunt
Disclaimer: This story is auto-aggregated by a computer program and has not been created or edited by Dailyhunt. Publisher: Baseerat Online
Top