Sunday, 09 May, 7.26 pm Hind Samachar

ہند سماچار
میڈیکل میگزین '' دی لینسیٹ'' کا طنز- ہندوستان میں کورونا سے بگڑی صورتحال کے لئے مودی حکومت ذمہ دار

نیشنل ڈیسک: انٹرنیشنل میڈیکل میگزین ' دی لینسیٹ 'نے ہندوستان میں کورونا کے بڑھتے ہوئے معاملات پر ایک اداریہ میں لکھاکہ وزیر اعظم اور ان کے وزرا ء کو اپنی غلطیوں کو قبول کرنا ہوگا۔ دی لینسیٹ نے اپنے مضمون میں لکھا ہے کہ ہندوستان نے کورونا کی پہلی لہر کا کامیابی سے سامنا کیا ، لیکن اب مودی انتظامیہ کو یہ تسلیم کرنا پڑے گا کہ ہندوستان میں آج ان کی غلطیوں کی وجہ سے ایسی صورتحال ہے۔
میگزین میں لکھا گیا ہے کہ بحران کے اس دور میں حکومت ہند پر کھلے عام تنقید ہو رہی ہے اور اس کے لئے وزیر اعظم مودی کا کام قابل معافی نہیں ہے کیونکہ وہ ہندوستان کو اس صورتحال سے گزرنے سے نہیں روک سکے۔ اداریے میں کہا گیا ہے کہ کورونا کی پہلی لہر کی کا جس میابی سے ہندوستان نے سامنا کیا تھا ، ا سپر پانی پھر گیا ۔ اپریل تک کئی ماہ گزرنے پر بھی حکومت کووڈ- 19 ٹاسک فورس پوری نہیں ہوئی تھی ، جس کے نتائج آج سب کے سامنے ہیں۔ ہندوستان میں اب بحران بڑھ گیا ہے۔
میگزین نے کہا کہ حکومت کا خیال ہے کہ کئی مہینوں سے کورونا کیسوں میں کمی کی وجہ سے ، ہندوستان نے اب وائرس کو شکست دی ہے ، جبکہ اس دوران دوسری لہر کی وارننگ بھی دی گئی تھی ، اتنا ہی نہیں ، نئے اسٹرین نے بھی ہندوستان میں دستک دے دی تھی ، پھر ہندوستان حکومت الرٹ نہیں ہوئی ۔
اداریے میں لکھا گیا تھا کہ مارچ کے آغاز میں ، ہندوستان میں کورونا کی دوسری لہر نے دستک دی تھی۔ اس کے باوجود حکومت نے مذہبی تقاریب ، سیاسی ریلیوں کی اجازت دی۔ ریلیوں کے دوران کورونا قوانین پر بھی عمل نہیں کیا گیا۔ میگزین نے لکھا ہے کہ وزیر اعظم مودی کی توجہ کورونا کو روکنے کے بجائے ٹویٹر پر اپنی ہو رہی تنقید کو دور کرنے پر زیادہ مرکوز تھی۔
میگزین نے لکھا ہے کہ انسٹی ٹیوٹ فار ہیلتھ میٹرکس اینڈ اویلیویشن کا اندازہ ہے کہ 1 اگست تک ہندستان میں کورونا کے 10 لاکھ افراد ہلاک ہوجائیں گے۔ میگزین نے کہا ہے کہ اگر ایسا ہوتا ہے تو ، اس آتم گھاتی ( جان لیوا ) قومی تباہی کے لئے مودی حکومت ذمہ دار ہوگی۔

Dailyhunt
Disclaimer: This story is auto-aggregated by a computer program and has not been created or edited by Dailyhunt. Publisher: Hind Samachar Urdu
Top