Thursday, 16 Jul, 7.42 pm Hind Samachar

ہند سماچار
یوپی کے وزیر تعلیم کا بیان- معاف نہیں ہوگی سکولوں کی فیس، ایسے تو بند ہوجائیں گے 6 لاکھ سکول

لکھنؤ: یوپی کے وزیر مملکت برائے بنیادی تعلیم ، ڈاکٹر ستیش دویدی نے جمعرات کو ایک بڑا بیان دیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ اسکول کی فیسیں معاف نہیں کی جائیں گی۔ انہوں نے کہا کہ لاک ڈاؤن میں سکول نہ چلنے کی وجہ سے بچوں کی فیس معاف کرنے کا مطالبہ غیر مناسب ہے ۔ ایسا کرنے سے ، ریاست کے 6 لاکھ سے زیادہ سکول بند ہوجائیں گے ۔
دوویدی نے کہا کہ یوپی میں 1 لاکھ 69 ہزار سکول ہیں۔ یہاں پر 6 لاکھ سے زیادہ پرائیویٹ سکول ہیں۔اگر فیسیں معاف کر دی گئیں تو پرائیویٹ سکول بند ہوجائیں گے ۔ حکومت نے پہلے ہی کہا ہے کہ جو شخص فیس وصول کرنے سے قاصر ہے اور ان سے کئی زبردستی فیس لینے کی کوشش کر رہا ہے تو شکایت کرنے پر اسکے خلاف کارروائی ہوگی ۔ کئی ایسے لوگ ایسے ہیں جو انجینئرز اور سرکاری ملازمت میں ہیں ، وقت پر تنخواہ ملنے کے بعد بھی وہ چاہتے ہیں کہ فیس معاف کی جائے۔ اس قسم کا مطالبہ مناسب نہیں ہے۔
وزیر نے کہا کہ 30 جولائی تک مرکزی حکومت نے بچوں کو اسکول نہ آنے کی ہدایت کی ہے۔ وہ اس ہدایت نامے پر عمل پیرا ہیں۔ آن لائن کلاسسز نے اپریل میں شروع ہونے والی سکولوں کے کورس کے نقصان کی تلافی کی ہے۔ اساتذہ نے عالمی وبا کے خوف سے بچوں کو بھی باہر نکالا ہے۔ وہ اس کے لئے مبارکباد کے مستحق ہیں۔ مزید یہ کہ مرکز اور ریاستی حکومت کی ہدایات کی بنیاد پر کلاسسز چلنے کے لئے فیصلہ لیں گے ۔ 24 مارچ سے 30 جون تک راشن کی قیمت ان کے بنک اکاؤنٹ کے ذریعے ان کے گھر تک بھیج رہے ہیں۔

Dailyhunt
Disclaimer: This story is auto-aggregated by a computer program and has not been created or edited by Dailyhunt. Publisher: Hind Samachar Urdu
Top