Taasir Urdu Daily
Taasir Urdu Daily

بھارت کو ورلڈ چیمپئن بنانے والے کوچ پر پاکستان کی نظر

بھارت کو ورلڈ چیمپئن بنانے والے کوچ پر پاکستان کی نظر
  • 29d
  • 0 views
  • 1 shares

کراچی ، 28اکتوبر ۔جنوبی افریقہ کے سابق لیجنڈکھلاڑی گیری کرسٹن پاکستان کے نئے ہیڈ کوچ بن سکتے ہیں۔ کرسٹن اس سے قبل اپنی کوچنگ میں ٹیم انڈیا کو عالمی چیمپئن بنا چکے ہیں۔ گیری کرسٹن کے علاوہ آسٹریلیا کے سابق اوپنر سائمن کیٹچ اور پیٹر مورس بھی پاکستان کا کوچ بننے کی دوڑ میں شامل ہیں۔ٹی ۔20 ورلڈ کپ کے آغاز سے عین قبل پاکستان کے ہیڈ کوچ مصباح الحق اورگیندبازی کوچ وقار یونس نے اپنے عہدوں سے استعفیٰ دے دیاتھا۔ دونوں کے مستعفی ہونے کے بعد سابق آف اسپنر ثقلین مشتاق کو پاکستان قومی ٹیم کا عبوری کوچ اور سابق آل راونڈر عبدالرزاق کو گیندبازی کوچ بنا یا گیا ہے۔ تاہم ان کی مدت کار ٹی۔20 ورلڈ کپ کے بعد ہی ختم ہوجائے گی۔گیری کرسٹن 2008 سے 2011 تک ہندوستانی ٹیم کے ہیڈ کوچ تھے۔ ان کی کوچنگ میں ہندوستانی کرکٹ ٹیم نے 2011 کا ون ڈے ورلڈ کپ جیتا تھا۔ کرسٹن کی کوچنگ میں ہی ٹیم انڈیا پہلی بار ٹیسٹ رینکنگ میں پہلی پوزیشن پر پہنچی تھی۔ سائمن کیٹچ کے بارے میں بات کریں تو وہ آئی پی ایل میں کولکاتا نائٹ رائیڈرس (کے کے آر) کے اسسٹنٹ کوچ اور رائل چیلنجرس بنگلور کے ہیڈ کوچ کے طور پر کام کر چکے ہیں۔ پیٹر مورس دو بار انگلینڈ کے ہیڈ کوچ بھی رہ چکے ہیں۔ ساتھ ہی مورس ان چند کوچز میں سے ایک ہیں جنہوں نے دو مختلف ٹیموں کے ساتھ کاؤنٹی چیمپئن شپ جیتی ہے۔

Dailyhunt

مزید پڑھیں
Hind Samachar
Hind Samachar

زرعی قوانین کی منسوخی سے متعلق بل پہلے ہی دن لوک سبھا میں لانے کا فیصلہ

زرعی قوانین کی منسوخی سے متعلق بل پہلے ہی دن لوک سبھا میں لانے کا فیصلہ
  • 3m
  • 0 views
  • 0 shares

نئی دہلی:حکومت پارلیمنٹ کے سرمائی اجلاس کے پہلے دن لوک سبھا میں زراعت کے تینوں متنازع قوانین کو منسوخ کرنے کا بل پیش کرے گی۔پارلیمنٹ کا سرمائی اجلاس پیر سے شروع ہو رہا ہے اور زرعی قانون کی منسوخی بل 2021 لوک سبھا کے پہلے دن کے ایجنڈے میں درج ہے۔خیال رہے وزیر اعظم نریندر مودی نے 29 نومبر کو ہی ان بلوں کو منسوخ کرنے کا اعلان کیا تھا۔ اس کے بعد گزشتہ بدھ کو مرکزی کابینہ کی میٹنگ میں زرعی قوانین کی منسوخی سے متعلق اس بل کو منظوری دی گئی۔
اطلاعات و نشریات کے وزیر انوراگ ٹھاکر نے اس وقت کہا تھا کہ حکومت سرمائی اجلاس کے پہلے ہفتے میں ہی ترجیحی بنیادوں پر متنازع زرعی قوانین کو منسوخ کرنے کی کارروائی شروع کرے گی۔اس کے پیش نظر کانگرس اور بھارتیہ جنتا پارٹی سمیت دیگر جماعتوں نے وہپ جاری کرتے ہوئے اپنے اپنے اراکین کو پہلے دن ایوان میں موجود رہنے کو کہا ہے۔تینوں نئے زرعی قوانین گزشتہ سال ستمبر میں منظور کیے گئے تھے لیکن کسانوں کی کئی تنظیموں نے ان قوانین کو کسان مخالف قرار دیتے ہوئے گزشتہ سال 26 نومبر سے ان کے خلاف احتجاج اور دھرنا شروع کر دیا تھا۔ کسانوں کی تنظیمیں اس وقت سے ان قوانین کو منسوخ کرنے کا مطالبہ کر رہی تھیں۔

Dailyhunt

مزید پڑھیں

No Internet connection