Taasir Urdu Daily
Taasir Urdu Daily

لائیو شو میں بے عزتی کئے جانے پر شعیب اختر نے چھوڑا شو

لائیو شو میں بے عزتی کئے جانے پر شعیب اختر نے چھوڑا شو
  • 29d
  • 0 views
  • 193 shares

کراچی ، 28اکتوبر ۔پاکستان کے سابق تیز گیندباز شعیب اختر ان چند کھلاڑیوں میں سے ہیں جو ہندوستان اور پاکستان کے درمیان کرکٹ کے ساتھ ساتھ دیگر طرح کے تعلقات میں بہتری کی ہمیشہ سے وکالت کرتے رہے ہیں۔ ٹی۔20ورلڈکپ میں ہندوستان اور پاکستان کے درمیان کھیلے گئے میچ پر اپنے تبصرے کولے کر بھی وہ گذشتہ کچھ دنوں سے سرخیوں میں چھائے ہوئے ہیں۔ شعیب اکثر کرکٹ شوز میں بات کرتے اور اپنی رائے دیتے نظر آتے ہیں۔ شعیب پی ٹی وی کے ایسے ہی ایک اسپورٹس شو میں پہنچے تھے اور پاکستان کی کارکردگی کے بارے میں بات کر رہے تھے۔ اس دوران ٹی وی اینکر ڈاکٹر نعمان نیاز ایک بات پر سابق پاکستانی گیندباز سے ناراض ہو گئے اور دوران شو ہی انہیں شو چھوڑنے تک کو کہہ دیا۔ شعیب نے فوری طور پر شو چھوڑ دیا اور اس واقعے کے بعد انہیں سوشل میڈیا پر مداحوں کی جانب سے کافی حمایت مل رہی ہے۔ پاکستان اور نیوزی لینڈ کے درمیان آئی سی سی ٹی ۔20 ورلڈ کپ کا میچ 26 اکتوبر کو کھیلا گیا تھا اور اس میچ کے حوالے سے پی ٹی وی پر اسپورٹس لائیو شو چل رہا تھا جس میں شعیب اختر، ویو رچرڈس اور ثنا میر جیسے بڑے نام شامل تھے۔ نعمان نے شعیب اختر کو کسی معاملے پر شو چھوڑنے کو کہا جس کے بعد لائیو شو میں وقفہ لیا گیا۔ شو دوبارہ شروع ہوا تو شعیب اختر نے کہا کہ جس طرح سے نیشنل ٹی وی پر میرے ساتھ سلوک کیا گیا ہے، مجھے نہیں لگتا کہ مجھے اس شو کا حصہ ہونا چاہیے اور میں پی ٹی وی سے استعفیٰ دے رہا ہوں اور یہ کہہ کر وہاں سے چلے گئے۔ سوشل میڈیا پر شعیب کی حمایت میں مداح اب سامنے آ گئے ہیں اور اینکر نعمان پر پابندی لگانے کا مطالبہ کر رہے ہیں۔ شائقین کا کہنا ہے کہ ایسے لیجنڈ باؤلر کی توہین بالکل نہیں کی جانی چاہیے۔ نعمان نے اختر کو شو چھوڑنے کا کہا اور پھر اختر شو چھوڑ کر چلے گئے، یہ دونوں ویڈیو کلپس سوشل میڈیا پر وائرل ہو گئے۔ جس کے بعد اختر نے ٹوئٹر پر ویڈیو جاری کرتے ہوئے بتایا کہ پوری کہانی کیا تھی۔

Dailyhunt

مزید پڑھیں
Hind Samachar
Hind Samachar

سرینگر میں کے خلاف فوج کو بڑی کامیابی، فوج نے مار گرائے ٹی آر ایف کمانڈر مہران سمیت 3آتنکی

سرینگر میں کے خلاف فوج کو بڑی کامیابی، فوج نے مار گرائے ٹی آر ایف کمانڈر مہران سمیت 3آتنکی
  • 1hr
  • 0 views
  • 1 shares

سری نگر: جموں وکشمیر کے گرمائی دارلخلافہ سرینگر میں بدھ کی شام کو پولیس نے ایک مختصر جھڑپ کے دوران 3 ملی ٹینٹوں کو ہلاک کرنے کا دعویٰ کیا ہے ۔
پولیس ذرائع نے بتایا کہ 'سری نگر کے رام باغ علاقے میں ملی ٹینٹوں کی موجودگی کی اطلاع موصول ہونے کے بعد سکیورٹی فورسز نے جونہی آپریشن شروع کیا تو وہاں پر موجود دہشت گردوں نے حفاظتی عملے پر اندھا دھند فائرنگ شروع کی۔'
انہوں نے کہا کہ سکیورٹی فورسز نے بھی پوزیشن سنبھال کر جوابی کارروائی کا آغاز کیا جس دوران تین ملی ٹینٹ مارے گئے ۔ دریں اثنا انسپکٹر جنرل آف پولیس کشمیر رینج وجے کمار نے اس بارے میں بتایا کہ 'سری نگر کے رام باغ علاقے میں تین دہشت گرد مارے گئے ہیں اوراسی کے ساتھ آپریشن بھی اختتام پذیر ہوا ہے۔'
مارے گئے ملی ٹینٹوں کی شناخت مہران یاسین شالہ ولد محمد یاسین نواسی جمالتہ ایم آر گنج ،باسط ملک ولد علی محمد ملک نواسی نوپورہ صفاکدل اور منظور احمد ولد ثناء اللہ میر نواسی بابر پلوامہ کے طور پر کی گئی ہے۔
اس دوران آئی جی پی کشمیر وجے کمار نے کہا کہ رام باغ مڈبھیڑ میں مارے گئے 3ملی ٹینٹوں میں سے ایک مہران ٹی آر ایف کا کمانڈر تھا۔انہوں نے کہا کہ پولیس طویل عرصہ سے اس کا پیچھا کر رہی تھی۔خاص کر حال ہی میں 2ٹیچروں و دیگر شہریوں کے قتل کے سلسلے میں اس کا نام سامنے آنے کے بعد۔

Dailyhunt

مزید پڑھیں

No Internet connection