Taasir Urdu Daily
Taasir Urdu Daily

لیسٹر میں دیوالی تقریب، ہزاروں افراد کی شرکت، لیٹرل فلو ٹیسٹ

لیسٹر میں دیوالی تقریب، ہزاروں افراد کی شرکت، لیٹرل فلو ٹیسٹ
  • 92d
  • 0 views
  • 3 shares

لندن ،۲۸؍اکتوبر- کورونا وائرس کوویڈ 19 کی وجہ سے گزشتہ سال منسوخ کئے جانے والے ہندوئوں کے دیوالی فیسٹیول میں اس بار ہزاروں افراد نے شرکت کی۔ فیسٹول آف لائٹس کی تقریبات کے آغاز پر ہونے والے ایونٹ میں عام طور پر 45000 افراد شرکت کرتے ہیں۔ لیسٹر کے بلگریو روڈ پر ہونے والے ایونٹ میں اس مرتبہ محدود تعداد میں لوگوں نے شرکت کی، جہاں روشنیوں اور رنگوں کی بہار دیکھنے میں آئی۔ لیسٹر سٹی کونسل کا کہنا ہے کہ لوگوں کو محفوظ رکھنے کیلئے اقدامات کئے گئے تھے اور لوگوں سے کہا گیا تھا کہ وہ شرکت کرنے سے پہلے ٹیسٹ کروائیں۔ دنیا بھر میں ہندو، سکھ اور جین مت کے افراد دیوالی مناتے ہیں۔ لیسٹر گولڈن مائل کے ساتھ روشنیاں عام طور پر دیوالی کے دن سے دو ہفتے پہلے ہی شروع کر دی جاتی ہیں۔ یہ بھارت کے باہر اس تہوار کی سب سے بڑی تقریب ہوتی ہے۔ اس بار دیوالی کی تقریب میں شرکت کرنے والوں کی حوصلہ افزائی کی گئی تھی کہ وہ اپنے لیٹرل فلو ٹیسٹ کروائیں اور اگر ان کے ٹیسٹ مثبت ہیں یا وہ خود کو بہتر محسوس نہیں کر رہے تو گھروں پر ہی قیام کریں۔ سٹی کونسل نے کہا کہ لوگوں کی بڑی تعداد کو ایک ہی جگہ پر جمع ہونے سے روکنے کیلئے بھی اقدامات کئے گئے تھے۔ مائل کے ساتھ ہی تین بڑی سکرینز لگائی گئی ہیں جن پر ڈانس اورمیوزک پرفارمنسز دکھائی جائیں گی۔ ان میں پہلے سے ریکارڈ کردہ کلچرل پروگرام اور کائونٹ ڈائون دکھایا گیا جبکہ معمول کے فائر ورک ڈسپلے کے متبادل کے طور پر کوسنگٹن پارک بلگریو روڈ پر ایک فائر گارڈن بنایا گیا ہے۔ ایونٹ منیجر تھیو کریو نے کہاکہ ماضی میں کسی بھی ایک وقت میں اس سائٹ پر 45000 افراد موجود ہوتے تھے جو کہ ہجوم کی بڑی تعداد ہوتی ہے، لہٰذا اس سال ہم نے لوگوں کو دور دور رکھنے کیلئے مزید جگہیں بنائیں اور سکرینز لگائی ہیں۔ انہوں نے کہا کہ ہم چاہتے ہیں کہ ہر ایک یہاں آئے اور اس فیسٹیول سے محفوظ انداز میں لطف اندوز ہو۔ لیسٹر سٹی کونسل نے کہا کہ 4 نومبر کو دیوالی کے تقریبات کیلئے ایسے ہی اقدامات کئے جائیں گے۔ لندن کے ٹرافلگر سکوائر میں ایونٹ میں عام طور پر 35000 افراد شرکت کرتے ہیں جو کہ ہفتے کو منعقد ہوا لیکن اس میں بھی شرکآ کی تعداد محدود کر دی گئی تھی۔ اور آن لائن سٹریم کا انتظام کیا گیا تھا جبکہ اس ویک اینڈ پر ولورہمپٹن میں لائٹس واپس آ گئیں اور فائر ورک بھی ہوا۔

مزید پڑھیں
ETV Bharat اردو
ETV Bharat اردو

Covid Restrictions in UK: برطانیہ میں کورونا کی تمام لازمی پابندیاں ختم

Covid Restrictions in UK: برطانیہ میں کورونا کی تمام لازمی پابندیاں ختم
  • 13m
  • 0 views
  • 0 shares

برطانیہ میں ماسک پہننا، ویکسین سرٹیفکیٹ اور گھر سے کام کرنے کے قوانین کو ختم Covid restrictions lifted in UK دیا گیا ہے جب کہ ملک میں یومیہ انفیکشن کے 1,02,292 معاملے رپورٹ ہو رہے ہیں۔

برطانیہ میں کورونا Covid in UK سے متعلق احکامات جیسے ماسک پہننا، ویکسین سرٹیفکیٹ اور گھر سے کام کرنے کے قوانین کو ہٹا Covid restrictions lifted in UK دیا گیا۔

ذرائع کے مطابق برطانیہ کی حکومت نے اپنے پلان بی کی تمام پابندیاں ختم کر دی ہیں، جو اومیکرون انفیکشن کی متوقع لہر سے پہلے لگائی گئی تھیں۔

صحت اور سماجی نگہداشت کے سیکرٹری ساجد جاوید نے کہا کہ ٹیکہ کاری پروگرام کی کامیابی اور کورونا کے مریضوں کے علاج کی سمجھ ہمیں ملک میں مزید آزادی کو بحال کرتے ہوئے احتیاط سے پلان اے پر واپس آنے کی اجازت دیتی ہے۔

کورونا پابندیوں میں نرمی کے باوجود دکانداروں اور مسافروں کو بعض معاملات میں ماسک پہننے کی تاکید کی جائے گی۔

یہ بھی پڑھیں: Boris Johnson faces calls to resign: برطانوی وزیراعظم سے عہدہ چھوڑنےکا مطالبہ

وزیر اعظم بورس جانسن نے کہا کہ ہمارے بوسٹر رول آؤٹ کی کامیابی، این ایچ ایس کی محنت اور حیرت انگیز عوامی ردعمل کا مطلب ہے کہ آج برطانیہ میں پلان بی کے اقدامات ختم ہو گئے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ وبا ختم نہیں ہوئی ہے۔ سب کو ہوشیار رہنا چاہیے۔ خاص طور پر وہ لوگ جنہوں نے ابھی تک خود کو ویکسین نہیں لگائی ہے۔

دی گارڈین کے مطابق یہاں یہ قدم ایسے وقت اٹھایا گیا ہے جب ملک میں روزانہ 1,02,292 انفیکشن کے معاملے رپورٹ ہو رہے ہیں، حالانکہ اس میں ہفتہ وار کمی آ رہی ہے۔

یو این آئی

مزید پڑھیں
Hindusthan Samachar
Hindusthan Samachar

کانگریس بجٹ اجلاس میں کسانوں اور بے روزگاری کے مسئلہ پر حکومت کو گھیر سکتی ہے

کانگریس بجٹ اجلاس میں کسانوں اور بے روزگاری کے مسئلہ پر حکومت کو گھیر سکتی ہے
  • 27m
  • 0 views
  • 0 shares

نئی دہلی، 28 جنوری (ہ س)۔ آئندہ بجٹ اجلاس میں مرکزی حکومت کو گھیرنے کی تیاری میں کانگریس ابھی سے مصروف ہو گئی ہے۔پارلیمنٹ میں کن کن مدعوںپر کانگریس کو گھیرنا ہے، اس کو لے کر جمعہ کے روز کانگریس صدر سونیا گاندھی کی قیادت میں پارٹی کی پارلیمانی پارٹی کی میٹنگ ہوئی ۔

کانگریس ذرائع کا کہنا ہے کہ اس میٹنگ میں بجٹ سیشن کے دوران حکومت کو کن مسائل پر گھیرنا ہے، اس پر بات چیت ہوئی ہے۔ کانگریس، اپوزیشن جماعتوں کے ساتھ مل کر مرکزی حکومت کو روزگار، چین کے تجاوزات، کسانوں، کورونا متاثرین کے لیے راحتپیکج اور ایئر انڈیا کی فروخت سمیت کئی دیگر مسائل پر گھیر سکتی ہے۔

قابل ذکر ہے کہ بجٹ اجلاس کا پہلا مرحلہ پیر کے روز شروع ہو رہا ہے۔ اس دوران اقتصادی سروے ایوان کی میز پر رکھا جائے گا اور عام بجٹ پیش کیا جائے گا۔ اس دوران کانگریس پارلیمنٹ میں اپوزیشن لیڈروں کے ساتھ کئی مسائل اٹھانا چاہتی ہے۔ اس حوالے سے آج پارٹی کی پارلیمانی پارٹی کا اجلاس ہوا۔ اس میٹنگ میں راجیہ سبھا میں اپوزیشن لیڈر ملیکارجن کھڑگے، لوک سبھا میں کانگریس کے لیڈر ادھیر رنجن چودھری، کانگریس کے سینئر لیڈر اے کے انٹونی، تنظیم کے جنرل سکریٹری کے سی وینوگوپال، آنند شرما، گورو گوگوئی، کے۔ سریش، جے رام رمیش سمیت پارٹی کے کئی لیڈران موجود تھے۔

ہندوستھان سماچار

مزید پڑھیں

No Internet connection