Wednesday, 21 Apr, 12.49 pm سیاست

شہر
کمبھ سے واپس ہونے والوں کے معائنوں و قرنطینہ سے غفلت

ملک کی مختلف ریاستوں میں قرنطینہ کی شرط ۔تلنگانہ حکومت کے کوئی احکام نہیں
حیدرآباد۔ ریاستی حکومت کورنا مریضوں کی تعداد پر قابو پانے میں سنجیدہ نہیں ہے اسی لئے کمبھ سے واپس ہونے والوں کے معائنوں اور قرنطینہ کے سلسلہ میں تاحال کوئی احکام جاری نہیں کئے گئے ہیں جبکہ ملک کی کئی ریاستوں کی جانب سے اس بات کا فیصلہ کیا گیا ہے کہ کمبھ میلہ سے واپس ہونے والوں کو قرنطینہ کے بغیر آزادانہ گھومنے کی اجازت نہیں رہے گی۔ دہلی ' اترپردیش' کرناٹک ' مہاراشٹرا کے علاوہ دیگر ریاستو ںکی جانب سے کمبھ سے واپس ہونے والوں کے کورونا معائنوں اور قرنطینہ کو لازمی کرنے کا فیصلہ کرکے یہ کہا جا چکا ہے کہ وہ کسی بھی ذرائع سے ریاست میں داخل ہوں انہیں آرٹی پی سی آر معائنہ کروانا لازمی ہوگا اور قرنطینہ کی شرط پر عمل کرنا ہوگا لیکن تلنگانہ میں حکومت سے تاحال ایسے کوئی احکامات جاری نہیں کئے گئے ہیں اور نہ ہی کمبھ سے واپس ہونے والو ںکی جانچ کے علاوہ ان کیلئے قرنطینہ اصولوں کا بھی تعین نہیں کیا گیا ہے جس کے سبب نہ صرف شہریوں بلکہ ڈاکٹرس کی تشویش میں بھی اضافہ ہونے لگا ہے کیونکہ تلنگانہ میں کمبھ سے واپس ہونے والوں کو اگر کھلا چھوڑ دیا جاتا ہے اور انہیں حمل و نقل کی آزادی فراہم کی جاتی ہے تو وہ ریاست میں کورونا پھیلانے کا سبب بنیں گے۔ قومی سطح پر شہرت یافتہ کئی متفکر شہریوں کی جانب سے یہ کہا جا رہاہے کہ کمبھ کے میلہ سے واپس ہونے والے اپنی ریاستوں میں کورونا وائرس کو اس طرح تقسیم کریں گے جیسے وہ پرساد تقسیم کرتے ہیں۔ محکمہ صحت کے ایک عہدیدار نے بتایا کہ کمبھ میلہ سے واپس ہونے والوں کے متعلق رہنمایانہ خطوط اور قرنطینہ اصولوں کے تعین کیلئے حکومت کو سفارشات روانہ کردی گئی ہیں لیکن اس پر کوئی فیصلہ نہیں کیا گیا ہے ۔ سال گذشتہ تلنگانہ میں حضرت نظام الدین ؒ مرکز کا دورہ کرنے والے تبلیغی احباب کو جس طرح سے نشانہ بنایا گیا تھا ایسی کوئی سرگرمی کمبھ میلہ سے واپس ہونے والوں کیلئے نہیں دکھا ئی جارہی ہے جبکہ دنیا بھر میں کمبھ کے میلہ کے دوران پرہجوم اسنان پر حیرت کا اظہار کرتے ہوئے کمبھ میلہ کے شرکاء کو کورونا ایٹم بم قرار دیا گیا ہے لیکن تلنگانہ میں اس طرح کے کوئی اقدامات نہ کئے جانے پر مختلف گوشوں سے حیرت کا اظہار کئے جانے کے علاوہ حکومت متنبہ بھی کیا جا رہاہے۔

Dailyhunt
Disclaimer: This story is auto-aggregated by a computer program and has not been created or edited by Dailyhunt. Publisher: The Siaset Daily Urdu
Top