Friday, 22 Jan, 2.03 am بصیرت آن لائن

سرورق
نئے زرعی قوانین کے خلاف کسانوں کازبردست احتجاج

مرکزی حکومت اور وزیر اعظم کو ان قوانین کو ہر صورت میں واپس لیناہوگا: بھگت سنگھ ورما
دیوبند،21 ؍جنوری(سمیر چودھری؍بی این ایس)
کسان تنظیم پچھم پردیش مکتی مورچہ کی جانب سے حسب اعلان آج مورچہ کے قومی صدر بھگت سنگھ ورما کی قیادت میں سیکڑوں کسانوں نے ٹریکٹر ٹرالی ریلی نکال کر کسان قوانین کی زبردست مخالفت کی اور کسانوں کے ساتھ ہورہی زیادتی پرقدغن لگانے کی مانگ کی۔ریلی میں سیکڑوں کسان ٹریکٹر ٹرالیوںاور بائکوں پر سوار ہوکر شریک ہوئے۔ اسٹیٹ ہائیوے پر واقع جامعہ طبیہ تیراہے پر پہنچ کر کسانوں نے ہائیوے جام کرتے ہوئے جم کر نعرے بازی کی۔بعد ازاں تلہیڑی چنگی، منگلو ر چوکی اور مظفرنگر چنگی سے ہوتے کسان جلسوں کی شکل میں ایس ڈی ایم دفتر پر پہنچے اور کسانوں کے خلاف ہورہی زیادتی پر زبردست احتجاج کیا۔ا س موقع پر تنظیم کے صدر بھگت سنگھ ورما نے کسانوں سے خطاب کرتے ہوئے کہاکہ مرکزی حکومت کے ذریعہ لائے گئے تین نئے زرعی قوانین کسانوں کو پھانسی پھندا پر لٹکانے کے مانند ہیں، جنہیں کسا ن کسی بھی صورت میںبرداشت نہیںکرینگے، انہوں نے کہاکہ مرکزی حکومت اور وزیر اعظم کو ان قوانین کو ہر صورت میںواپس لیناہوگا،انہوں نے کہاکہ یہ قوانین نہ تو کسانوں کے مفاد میں ہیں اور نہ ہی عوام کو اس کا فائدہ پہنچے گا بلکہ کچھ کارپوریٹ گھرانوں کو اس سے فائدہ ہوگا،لیکن ملک کا کسان حکومت اور کارپوریٹ گھرانوں کے اس خواب کو پورا نہیں ہونے دیگا۔ انہوں نے کہاکہ کسانوں کو ان کی فصلوں کی واجب قیمت دلانے کے لئے سوامی ناتھن کمیشن کی رپورٹ کو نافذکیاجائے۔ انہوںنے کہاکہ گناّ کا نصف سیزن گزر گیاہے لیکن اترپردیش حکومت نے گنیّ کے ریٹ کا اعلان نہیں کیاہے اور کسانوں کے 600؍ روپیہ فی کنٹل کے مطالبہ کو نظر انداز کردیاہے۔ اس کے علاوہ شوگر فیکٹروں پر کسانوںکے بقایہ کے سلسلہ میں ابھی تک کوئی ٹھوس قدم نہیں اٹھایا گیا ہے اور سپریم کورٹ و ہائی کورٹ کی ہدایت کو بھی نظر انداز کیاجارہاہے۔ اس دوران کسانوںنے ایس ڈی ایم دیوبند راکیش کمار اور سی اورجنیش کمار اپادھیائے کو کسانوںکے مطالبہ پر مبنی 12؍ نکاتی میمورنڈم سونپ کر صدر جمہوریہ کو ارسال کیا۔ میمورنڈم میں مطالبہ کیاگیاہے کہ پنجاب کے کسانوں کی طرز پر اترپردیش کے کسانوں کو بھی مفت بجلی دی جائے، کسانوں کے استحصال کو روکا جائے، کسانوںکے لئے ڈیژل کی قیمت 30؍ روپیہ لیٹر کی جائے، کسانوںکے لئے ٹول ٹیکس مفت کئے جائیں اور شوگر فیکٹروں میں ہونے والی بدعنوانی اور کسانوں کے زیادتی پر قدغن لگایاجائے۔ ریلی کے دوران تنظیم کے خازن راجندر چودھری، حاجی مرتضیٰ تیاگی،ریاستی نائب صدر مفتی اسعد رانا،واجد علی تیاگی،عاصم ملک،سردار گلویندر سنگھ، پنڈت نیرج کپل،ڈاکٹر محمدارشد،رویندر چودھری،سچن پردھان،ہرپال سنگھ،ارون کمار،ثمرپال سنگھ،ڈاکٹر سنجے سنگھ،جوگیندر سنگھ، حاجی زاہد حسن،رشی پال گوجر،حاجی سلیمان،محمد فاروق،ریاست پہلوان،محمد یاسین،قاری شاہد سمیت سیکڑوں کسان موجودرہے۔

Dailyhunt
Disclaimer: This story is auto-aggregated by a computer program and has not been created or edited by Dailyhunt. Publisher: Baseerat Online
Top